امتحانات میں طلباء کو 5 فیصد اضافی نمبرز دینے کا فیصلہ

وفاقی وزیر تعلیم کا کہنا ہے کہ امتحانات میں طلباء کو مزید 5 فیصد اضافی نمبر دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ لازمی مضمون کے امتحانات میں طلباء کو 5 فیصد نمبر ایڈ کردیئے گئے ہیں۔

اسلام آباد میں بروز بدھ 4 اگست کو وزرائے تعلیم کے اجلاس کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کا کہنا تھا کہ سندھ بالخصوص کراچی میں کرونا وائرس سے بنتی صورت حال تشویش ناک ہے، جہاں 8 اگست تک تعلیمی ادارے بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ جب کہ باقی صوبوں نے اسکول بتدریج کھلے رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ تمام صوبوں نےمتفقہ فیصلہ کیا ہے کہ تعلیمی سرگرمیوں کو بحال رہنا چاہیئے، جب کہ ویکسی نیشن کیلئے 31اگست تک کی ڈیڈ لائن دی ہے۔ تعليمی ادارے 50 فيصد حاضری کے ساتھ کھليں گے۔ جامعات ميں 31 اگست تک ویکسی نیشن لازمی قرار دی گئی۔ تعلیمی اداروں میں ایس اوپیز کو سختی سے یقینی بنانے پر اتفاق کیا گیا ہے۔ تاہم سندھ نے متاثرہ اضلاع میں اسکول بند رکھنے کی تجویز دی ہے۔

امتحانات سے متعلق وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ لازمی مضامین کے امتحانات میں طلباء کو 5 فیصد اضافی نمبر دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ کمپلسری امتحانات کے کل نمبروں میں طلباء کیلئے مزید 5 فیصد نمبرز ایڈ کیے گئے ہیں۔ جن جن صوبوں میں امتحانات جاری ہیں، وہاں امتحانات اپنے شيڈول کے مطابق ہی ہوں گے، جب کہ کراچی سمیت سندھ بھر میں امتحانات سے متعلق فیصلہ کچھ روز کے بعد کیا جائے گا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ رواں ماہ کے اختتام میں این سی او سی کے اجلاس میں صورت حال کا مزید جائزہ لیکر مستقبل کے لائحہ عمل کا اعلان کیا جائے گا

اپنا تبصرہ بھیجیں