خوبصورت لڑکی بنی کس کی تین راتوں کی مہمان


خوبصورت لڑکی بنی کس کی تین راتوں کی مہمان

عمربن حبیب روم کی قیدمیں آئے توان کے دس آدمی تھےجن میں 9کوقتل کردیاگیایہ بہت خوبصورت تھے عیسائی بادشاہ نے کہاکہ اگرتواپنادین تبدیل کردے تومیں تمہیں اپنی آدھی ریاست بھی دوں گااوراپنی بیٹی کی شادی بھی تم سے کروں گاانہوں نے کہاکہ ساراملک عرب بھی دے دے اورملک روم بھی دے دے میں ایک پل کے لیے بھی اپنادین نہیں چھوڑ سکتا
بادشاہ کوایک ترکیب سوجھی اس نے ایک گھرمیں انہیں بندکردیااورایک خوبصورت لڑکی کوکہاکہ اس کے گناہ کروائو۔لڑکی آگئی اورحضرت عمربن حبیب کوگناہ کی دعوت دینے لگی حضرت نے نظراٹھاکراس لڑکی کونہ دیکھا۔

تین دنگزرگئے اورتین راتیں حضرت عمربن حبیب نے روٹی کھائی نہ نظراوپراٹھائی لڑکی نے کہاتوکیابلاہے تین دن سے نہ تونے کھایانہ پیااورنہ تیری نظراٹھی کون ہے توکیاہے توتمہیں کون روکتاہے توانہوں نےفرمایااب تومیرے لیے شراب بھی حلال ہے جس سطح پرمیری پیاس پہنچ چکی ہے اوریہ گوشت بھی حلال ہے۔

سورکاگوشت پکاہواتھاانہوں نے کہاکہ مجھے میرے رب سے حیاآتی ہےکہ وہ مجھے دیکھ رہاہے میں یہ کام نہیں کرسکتالڑکی تین دن کی بجائے تیس دن بیٹھی رہے میں یہ کام نہیں کرسکتامیں اپنی جوانی پرداغ نہیں لگواسکتایہ امانت ہے ۔لڑکی نے کہاتیرے جیسے انسانیت کے تاج کومیں قتل نہیں ہونے دوں گی لڑکی نے باہرنکل کربادشاہ سے کہاکہ سردارتونے مجھے کس کے پاس بھیجالوہاہے نہ کھایانہ پیا،پتھرہے کہ نظراٹھاکہ نہ دیکھامیں اس پرکیاہاتھ ڈالتی ۔

رات کولڑکی آئی اورکھانالے آئی اورایک مشکیزے میں پانی بھی لے آئی اورحضرت عمربن حبیب کودیابعدمیں دروازہ کھول کرکہاکہ یہاں سے نکل جائو یہ قطبی تارہ جودیکھ رہے ہواس اپنے دائیں کندھے پررکھوتوایک دن تم عراق پہنچ جائوگے۔

یہ کردارتھاجس نے صحرانشینوں کوقیصروقصریٰ کے اوپرجھنڈے گاڑھنے کی طاقت عطافرمائی
”جب عورت مرد کےساتھ ایک کام کرلیتی ہے“
عادتیں چار نہیں ہوتیں کہ ڈال لی جائیں ۔عادتیں تو دیمک ہوتی ہیں یہ لگ جایا کرتی ہیں۔ وہ چوبیس کی تھی اور اس نے شناختی کارڈ پر اپنی عمر بیس لکھوا کرکائنات کوچار برس چھوٹا کردیا ہے۔ جو باکردار ہواس کو سیانی کون کہتا ہے کسی مزدر کی بیٹی کو رانی کون کہتا ہے ۔ ہرکامیاب مرد کے پیچھے ایک عورت ہوتی ہے۔

جو دوسری عورتوں کو اس کے قریب بھٹکنے نہیں دیتی۔ کچھ لوگوں اور کچھ چیزوں کو ہم کھونا افورڈ نہیں کرسکتے لیکن ہمیں ان کو کھونا پڑتا ہے۔ ان سے دستبردار ہونا پڑتا ہے۔ پھر چاہے وہ ہماری خوشی کی آخری وجہ ہوں۔ کوئی چائے کی پیالی ایسی ہوتی ہے ج س کا ذائقہ زبان کبھی بھول نہیں پاتی۔ کچھ تعلق ایسے ہوتے ہیں جو انسان چھوڑتا ہی نہیں کیونکہ وہ چھوڑنا ہی نہیں چاہتا۔ لیکن ادکاری خوب کرتا ہے تعلق کو چھوڑنے کی اس میں قصور انسان کا نہیں ہوتا وہ چھوڑ ہی نہیں سکتا کیونکہ کچھ چیزیں انسان کے اختیار میں نہیں ہوتیں۔

انسان بے بس ہوتے ہیں۔ یہی حقیقت ہے کیونکہ کوئی سرگوشی ، مسکراہٹ، قہقہ ، آنسو اور کوئی سناٹا تمام عمر کے لیے زندگی پر حاوی ہو جاتا ہے۔ پرانی یادوں پر نئی یادیں سجانا، درحقیقت ایک مشکل امر ہے تبھی تو ہم تھک ہار کر بیٹھ جاتے ہیں۔ اور زندگی مسکراتی ہوئی پاس سے گزرجاتی ہے۔ جب عورت مرد کےساتھ ایک کام کرلیتی ہے۔ مرد مرنا پسند کرتا ہے لیکن اس عورت کے ساتھ کبھی بے وفائی نہیں کرتا۔ عورت جب مرد کوعزت دینے کا کام کرلیتی ہے

کیونکہ عزت کا درجہ محبت کے درجے سے بہت بڑا ہوتا ہے پھر وہ ہمیشہ کےلیے محبت کی اکیلی وارث بن جاتی ہے۔ ہم کتنی بھی کتابیں کھول لیں۔ اگرقرآن نہیں پڑھا تو کچھ نہیں پڑھا اس پر پڑنے والی دھو ل حقیقت میں ہمارے نامہ ء اعمال پر جمی ہے۔ بارگاہ رب العزت میں دعاگوں اللہ پا ک آپ کو اپنی رحمتوں اور برکتوں سے مالامال کرے ، رزق میں خیروبرکت میں عطافرمائے ۔ اور ہمیشہ اپی حفظ وایمان میں رکھے ۔آمین۔

2 تبصرے “خوبصورت لڑکی بنی کس کی تین راتوں کی مہمان

اپنا تبصرہ بھیجیں