مسلسل پیزا کھانے والے افراد ہوجائیں ہوشیار

برگر، پیزا، چپس وغیرہ ایسے کھانے ہیں جنہیں لوگ بڑے شوق سے کھاتے ہیں، ان سے پرہیز کرنا چونکہ ایک مشکل کام ہے، اگر آپ روزانہ یا ایک، دو دن چھوڑ کر بہت زیادہ پیزا کھا رہے ہیں تو یاد رکھیں کہ اس کے آپ کے جسم پر بہت بُرے اثرات مرتب ہو سکتے ہیں۔ اس لیے ضروری ہے کہ آپ کو معلوم ہو کہ اس مزیدار چیز کی زیادتی سے آپ کو جسمانی طور پر کن مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے؟
ضروری غذائیت کی کمی
کیا آپ نے کبھی سوچا کہ پیزا کے بعد بھی بھوک کیوں لگتی ؟ اصل میں پیزا میں ریشہ (فائبر) زیادہ نہیں ہوتا،ریشہ آپ کے پیٹ کو بھرنے کا احساس دلانے کے لیے بہت ضروری ہے اور وزن کم کرنے میں مدد دیتا ہے۔ لیکن ایک، دو پیزا سلائس سے آپ کو اتنا فائبر نہیں مل سکتا، جس سے آپ کو بھوک مٹنے کا احساس ہو۔ کچھ ہی دیر میں آپ کو پھر بھوک لگے گی۔ یہی وجہ ہے کہ کم فائبر رکھنے والی خوراک کا مستقل استعمال وزن میں اضافہ کرتا ہے
قبض
پیزا کے ہر سلائس کے ساتھ روٹی اور پنیر کا بہت زیادہ پیٹ میں جانا آپ کے لیے سنگین مشکلات کھڑی ہر سکتا ہے، فائبر نہ ہونے کی وجہ سے آپ کے ہاضمے کے نظام کا کام بڑھ جاتا ہے اور آپ کو سخت قبض ہو سکتا ہے، قبض تو ویسے ہی صحت کے لیے نقصان دہ ہے، بلکہ اسے ‘ام الامراض’ کہتے ہیں۔ اگر آپ روزانہ کی بنیاد پر پیزا کھا رہے ہیں اور ڈٹ کر کھا رہے ہیں تو جلد ہی دائمی قبض کا شکار ہو سکتے ہیں۔
دل کے امراض کا خطرہ
پیزا میں سوڈیم مواد زیادہ ہوتا ہے اور اس میں مصنوعی طریقے سے محفوظ کیا گیا پروسیڈ گوشت استعمال ہوتا ہے، اس لیے بہت زیادہ پیزا کھانے سے آپ کو دل کے امراض کا خطرہ لاحق ہو سکتا ہے، تحقیق کے مطابق بہت زیادہ پروسیسڈ گوشت کے استعمال سے دل کے امراض کے علاقے موٹاپا اور سرطان یعنی کینسر بھی ہو سکتا ہے۔
ذیابیطس کا خطرہ
کیا آپ جانتے ہیں کہ پنیر کی وجہ سے پیزا کے صرف ایک سلائس کا گلیسمک انڈیکس کتنا ہوتا ہے؟ کیونکہ یہ سادہ نشاستے سے بھرپور ہوتا ہے اور اس میں کافی ریشہ اور لحمیات (protein) نہیں ہوتے، اس لیے یہ خون میں شوگر کی مقدار کو یکدم بڑھا دیتا ہے کبھی کبھار ایسا ہو تو مسئلہ نہیں لیکن بار بار ایسا ہونے سے ذیابیطس (diabetes) کا خطرہ لاحق ہو جاتا ہے اور یہ مرض دل کی بیماریوں، اندھے پن، عصبیاتی امراض اور گردوں کے مسائل کا سبب بنتا ہے۔
وزن میں اضافہ
تحقیق کے مطابق جن چیزوں کا گلیسمک انڈیکس زیادہ ہو، ان کو کھانے کے باوجود آپ کو بھوک کا احساس رہتا ہے، یہی وجہ ہے کہ آپ انہیں زیادہ کھاتے ہیں اور یوں ان سے وزن بڑھ جاتا ہے، موٹاپے کی صورت میں کئی نئی بیماریوں کا دروازہ بھی کھل جاتا ہے

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں